#North Korea پُراسرار بیماری کا پھیلاؤ، شمالی کوریا نے انتہائی قدم اٹھالیا


پیانگ:شمالی کوریا میں پُراسرار بیماری پھیلنے کے پیش نظر لاک ڈاؤن لگادیا گیا ہے۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹ کے مطابق مقامی حکام نے لوگوں کو پانچ دن تک گھروں میں رہنے کا حکم دیتے ہوئے تاکید کی کہ وہ اس دوران وقفے وقفے سے اپنا بخار چیک کرتے رہیں۔

شمالی کوریا کا کہنا ہے کہ پیانگ یانگ میں ایک نامعلوم سانس کی بیماری تیزی سے پھیل رہی ہے جس کے باعث رہائشیوں کو گھروں میں رہنے کی ہدایات دی گئیں۔

پیانگ یانگ میں پانچ روزہ لاک ڈاؤن کے اعلان کے بعد دارالحکومت میں خوف و ہراس اور افراتفری پھیل گئی اور شہریوں کی ایک بڑی تعداد نے اشیائے خوردونوش کے لیے مارکیٹوں پر دھاوا بول دیا، متعدد مارکیٹ میں خریداروں کی لمبی قطاریں لگ گئیں اور بعض مقامات پر شہریوں کے مابین تلخ کلامی کے واقعات بھی پیش آئے۔

ادھر جاپانی میڈیا کے مطابق شمالی کوریا کے حکام نے لاک ڈاؤن کے اعلان کے ساتھ کورونا کا ذکر نہیں کیا صرف ایک پُراسرار بیماری کا ذکر کیا ہے جو سانس لینے کے عمل کو متاثر کرتی ہے۔

دوسری جانب امریکی خبر رساں ادارے کے مطابق شمالی کوریا نے کورونا کے ابتدائی دو سالوں میں ملک میں عالمی وبا کے کیسز سے انکار کیا تھا، گزشتہ سال مئی میں حکومت کے کورونا کیسز درج ہونے کی اطلاع دی تھی اور تین ماہ بعد وائرس پر قابو پانے کا اعلان بھی کر دیا تھا۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ زیادہ تر ماہرین صحت نے اس دعوے پر سوال اٹھاتے ہوئے کہا کہ شمالی کوریا کی حکومت بھی ممکنہ طور پر اس وائرس کے پھیلاؤ سے لاعلم ہے، اس کی وجہ ٹیسٹنگ سپلائیز کی کمی ہے۔

واضح رہے کہ شمالی کوریا کے پاس طبی وسائل کی کمی ہے اور بڑے پیمانے پر غربت کا شکار ہے، خیال کیا جاتا ہے کہ وہ خاص طور پر کورونا وائرس کا شکار ہے۔ تاہم اب تک حکومت کی جانب سے اس کا باضابطہ فیصلہ نہیں کیا گیا۔

Comments




#North #Korea #پراسرار #بیماری #کا #پھیلاؤ #شمالی #کوریا #نے #انتہائی #قدم #اٹھالیا

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *